0

صدر مملکت آصف علی زرداری سے سعودی وفد کی ملاقات

اسلام آباد: پاکستان اور سعودی عرب نے دونوں برادر ممالک کے باہمی فائدے کے لیے مضبوط شراکت داری قائم کرنے اور اقتصادی تعاون کو مزید فروغ دینے کے عزم کا اعادہ کیا ہے۔ یہ بات صدر مملکت آصف علی زرداری اور سعودی وزیر خارجہ شہزادہ فیصل بن فرحان السعود کے درمیان ملاقات میں ہوئی۔

سعودی وزیر خارجہ نے ایوان صدر میں ایک اعلیٰ اختیاراتی وفد کے ہمراہ صدر مملکت سے ملاقات کی۔ ایوان صدر کے پریس ونگ کے مطابق سعودی وفد میں وزیر پانی و زراعت، وزیر صنعت و معدنی وسائل، معاون وزیر سرمایہ کاری، سعودی خصوصی کمیٹی کے سربراہ اور وزارت توانائی اور سعودی پبلک انویسٹمنٹ فنڈ کے اعلیٰ حکام شامل تھے۔

پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری، وزیر خارجہ محمد اسحاق ڈار، وزیر برائے نجکاری اور سرمایہ کاری بورڈ عبدالعلیم خان، وزیر پیٹرولیم اور آبی وسائل مصدق مسعود ملک، وزیر صنعت و پیداوار رانا تنویر حسین اور سیکرٹری خارجہ سائرس سجاد قاضی اور اعلیٰ سرکاری حکام بھی ملاقات میں شریک تھے۔
صدر مملکت نے وفد کا خیرمقدم کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان اور سعودی عرب کے درمیان دیرینہ اور دہائیوں پرانے تعلقات ہیں اور پاکستان موجودہ تعلقات کو طویل المدتی تزویراتی اور اقتصادی شراکت داری میں تبدیل کرنا چاہتا ہے۔ انہوں نے اس بات پر روشنی ڈالی کہ پاکستان کی حکومت اور عوام خادم حرمین شریفین شاہ سلمان بن عبدالعزیز آل سعود کا انتہائی احترام کرتے ہیں اور سعودی عرب کے ساتھ کھڑے رہیں گے۔

صدر مملکت نے کہا کہ اسلامی دنیا کی خوشحالی سعودی عرب کی ترقی سے وابستہ ہے۔ انہوں نے سعودی ولی عہد اور سعودی عرب کے وزیر اعظم محمد بن سلمان کی جرات مندانہ اور دور اندیش قیادت اور ویژن 2030 کے تحت ہونے والی قابل ذکر پیش رفت کو سراہا۔ اس موقع پر سعودی وزیر خارجہ نے کہا کہ سعودی عرب پاکستان کے ساتھ اپنے تعلقات کو انتہائی اہمیت دیتا ہے اور پاکستان کے ساتھ مضبوط شراکت داری کے لیے پرعزم ہے۔ انہوں نے اس بات پر روشنی ڈالی کہ دونوں ممالک کے درمیان مضبوط تعلقات ہیں اور وہ کئی دہائیوں سے ایک دوسرے کی مدد کرتے آئے ہیں ۔انہوں نے سعودی عرب کی ترقی میں پاکستانی تارکین وطن کے کردار کو سراہا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں